ڈان لیکس ، طارق فاطمی کو دفتر خارجہ سے ہٹانے کا فیصلہ !

0

1

اسلام آباد ۔ طویل عرصے سے ڈان لیکس کی تحقیقات کا معاملہ التواء کا شکار تھا۔ چند روز قبل وزیر داخلہ نے بتایا تھا کہ رپورٹ پر کمیٹی کے اراکین کا اتفاق ہو گیا ہے اور تین چار روز میں وہ وزیر اعظم کو رپورٹ پیش کر دیں گے۔ تاہم اب ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ واقعے میں وزیر اعظم کے مشیر برائے امور خارجہ طارق فاتمی ملوث ہیں۔ ذرائع کے مطابق، طارق فاطمی کو دفتر خارجہ سے ہٹانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ طارق فاطمی کو ایک ہفتہ میں دفتر خارجہ سے ہٹایا جا سکتا ہے۔ طارق فاطمی پر متنازع خبر لکھوانے کا قوی شبہ ہے۔ انہوں نے بلااجازت خبر کے مندرجات اپنے طور پر لکھوائے۔

 حکومت نے ڈان لیکس کے معاملے کی تحقیقات کیلئے گزشتہ برس نومبر میں 7 رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی تھی۔ کمیٹی میں انٹیلی جنس بیورو، ملٹری انٹیلی جنس اور انٹر سروسز انویسٹی گیشن سے ایک ایک رکن شامل کیا گیا تھا۔ کمیٹی کے سربراہ جسٹس ریٹائرڈ عامر رضا خان کے علاوہ کمیٹی کے بقیہ 3 ارکان میں پنجاب کے محتسب اعلیٰ نجم سعید، سیکریٹری سٹیبلشمنٹ طاہر شہباز، فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی کے ڈائریکٹر ڈاکٹر عثمان انور شامل ہیں۔

وزیر داخلہ چودھری نثار کے مطابق، کمیٹی کے قیام کے وقت جسٹس عامر رضا خان نے اس کی سربراہی اس شرط پر قبول کی تھی کہ وہ صرف اس وقت کمیٹی کی رپورٹ پر دستخط کریں گے، جب تمام ارکان میں اتفاق ہو جائے گا اور اسی وجہ سے اس رپورٹ کی تشکیل میں اس قدر وقت لگا کہ ارکان میں اتفاق نہیں ہو رہا تھا:۔

Share.

About Author

Leave A Reply