پولیس شہدا کو کروڑوں روپے، گھر اور پلاٹ ملیں گے، تین پیکجز کا اعلان !

0

13

لاہور۔ پنجاب پولیس میں دہشت گردوں، بم دھماکوں اور ڈاکوؤں سے لڑتے ہوئے شہید ہونے والے اہلکاروں کو شہید ڈکلیئر کر کے ان کو شہدا پیکجز دینے کے لیے وزراء پر مشتمل اعلیٰ سطح کی 5 رکنی کمیٹی تشکیل دیدی گئی ۔ شہید ہونے والے افسروں اور اہلکاروں کے لیے علیحدہ علیحدہ تین پیکجز کا اعلان کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق کمیٹی وزیر قانون، وزیر انسداد دہشت گردی فورس، چیف سیکرٹری، آئی جی پنجاب اور ہوم سیکرٹری پر مشتمل ہو گی۔ سی سی پی او، آر پی اوز اور کمشنر شہدا کے کیس کمیٹی کو بھجوائیں گے جو اہلکاروں کو شہید ڈکلیئر کریگی جبکہ کمشنر اور آر پی اوز شہید ہونے سویلین افسروں کے کیس بھی اسی کمیٹی کو بھجوائیں گے۔ اس سے پہلے شہید ڈکلیئر کرنے کا اختیار آئی جی پنجاب کے پاس تھا۔ اس کے علاوہ پولیس شہدا کیلئے تین علیحدہ علیحدہ پیکجز کا اعلان بھی کیا گیا ہے۔

ان پیکیجوں میں دہشت گردی اور بم دھماکوں میں شہید ہونے والے افسروں واہلکاروں کو رکھا گیا ہے۔ پیکیج کے تحت کانسٹیبل کو 1 کروڑ روپے اور 5 مرلے کا پلاٹ، اے ایس آئی سے سب انسپکٹر تک 1 کروڑ 25 لاکھ روپے اور 7 مرلے کا گھر، انسپکٹر سے ڈی ایس پی تک 1 کروڑ 50 لاکھ روپے اور 10 مرلے کا گھر، ایس پی سے ایس ایس پی تک 1 کروڑ 80 لاکھ روپے اور 12 مرلے کا گھر جبکہ ڈی آئی جی کو 2 کروڑ روپے اور 20 مرلے کا گھر دیا جائے گا۔

پیکیج ٹو میں پولیس مقابلے، جرائم پیشہ افراد سے لڑتے ہوئے اور ناکوں پر ڈیوٹی کے دوران شہید ہونے والے اہلکاروں کو رکھا گیا ہے جس کے تحت کانسٹیبل اور ہیڈ کانسٹیبل کو 40 لاکھ، اے ایس آئی اور سب انسپکٹر کو 50 لاکھ، انسپکٹر اور ڈی ایس پیز کو 60 لاکھ، ایس پی اور ایس ایس پیز کو 80 لاکھ اور شہید ہونے والے ڈی آئی جی کو 1 کروڑ روپے دیے جائیں گے جبکہ ان افراد کو گھر کی مالیت کے پیسے بھی دیے جائیں گے۔

پیکیج تھری میں ٹریفک حادثات اور دوران ڈیوٹی اچانک ہلاک ہونے والوں کو رکھا گیا ہے۔ کانسٹیبل اور ہیڈ کانسٹیبل کیلئے 30 لاکھ، اے ایس آئی اور سب انسپکٹر کے لیے 40 لاکھ، انسپکٹر اور ڈی ایس پیز کیلئے 45 لاکھ جبکہ ایس پی اور ایس ایس پیز کے لیے 50 لاکھ روپے رکھے گئے ہیں:۔

 

Share.

About Author

Leave A Reply