پاک فوج کے خلاف ہرزہ سرائی، بڑا نجی چینل گرفت میں آگیا!

0

مئی 25, 2017
اہم ترین

اپنی رائے دیجئے

Image outcome for ‫پاک فوج‬‎

اسلام آباد -پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) نے ٹی وی چینل ’اے آر وائی نیوز‘ کے پروگراموں میں افواجِ پاکستان کے خلاف بہتان تراشی اور نفرت انگیزمواد نشر کرنے پر چینل کو اظہارِ وجوہ کے نوٹسز جاری کرتے ہوئے یکم جون 2017 کو جواب طلب کر لیا ہے۔ پہلا اظہار وجوہ نوٹس ٹی وی چینل پر مورخہ 10مئی 2017؁ء کو ڈان لیکس کے حوالے سے خصوصی ٹرانسمیشن پر جاری کیا گیا ہے مذکورہ پروگرام میں ایک شخص ارشد شریف نے افواج ِ پاکستان کے خلاف سنگین ،نامناسب اور ناروا الفاظ استعمال کئے اور فوج کے شعبہ تعلقات عامہ طرف سے ایک ٹویٹ کو واپس لئے جانے کے عمل پرانتہائی غیر ذمہ دارانہ تبصرہ کرتے ہوئے اُسے سانحہ 1971سے تشبیہ دی ۔ مذکورہ شخص کی یہ انتہائی شر انگیز تشبیہ پاکستان کے بہادر اور غیور جوانوں اور افسروں کے خلاف جو حالیہ دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ میں قربانیوں کی عظیم داستان رقم کر رہے ہیں نفرت پھیلانے کی کوشش کے زمرے میں آتی ہے۔اس طرح کے تبصرے سے افواجِ پاکستان کا مورال گرانے کی مذموم کوشش کی گئی ہے ۔ دوسرا اظہار وجوہ اِسی ٹی وی چینل کے ایک اور پروگرام ’دی رپورٹرز‘ بتاریخ 16مئی 2017؁ء میں عارف حمید بھٹی نامی شخص کی طرف سے تبصرے پر جاری کیا گیا ہے۔ موصوف نے پاک فوج میں ایک من گھڑت اور خودساختہ سروے کا ذکر بھی کیا ۔ پیمرا کے لائسنس ہولڈر کی حیثیت سے ’اے آر وائی نیوز‘ پر لازم ہے کہ وہ ملکی آئین ، قانون اور ریگولیٹر کی طرف سے دئیے گئے ضابطہ اخلاق پر مکمل عملدرآمد کرے اور کوئی ایسا اقدام نہ اُٹھائے جو ملکی اداروں کی تضحیک یا آئین ِ پاکستان اور پیمرا قوانین کی خلاف ورزی کے زمرے میں آتا ہو۔پیمرا نے اظہارِ وجوہ کے نوٹس کے ذریعے نجی ٹی وی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر کو دی گئی تاریخ کو ذاتی شنوائی کے لئے طلب کیا ہے اور دونوں پروگرامز پر الگ الگ وضاحت مانگی ہے ۔ جواب جمع نہ کروانے اور ذاتی شنوائی سے غیر حاضری کی صورت میں چینل کے خلاف یکطرفہ کاروائی عمل میں لائی جائے گی :-



2017-05-25

Share.

About Author

Leave A Reply