پاکستان کو سیریز بچانی ہے تواوول میں جیت کے پش اپس لگانا ہوں گے

0

IMG {
filter: alpha(opacity=100)!important;
}

اوول ٹیسٹ جیت کر سیریز برابر کرنے کی پوری کوشش کریں گے، مصباح الحق فوٹو: فائل

لندن:  انگلینڈ اورپاکستان کے درمیان چوتھا اور آخری ٹیسٹ کل سے اوول میں شروع ہورہا ہے اورگرین شرٹ کو سیریز بچانی ہے تو اوول میں جیت کے پش اپس لگانا ہوں گے

پاکستان نے چار ہفتے قبل 4 ٹیسٹ میچز کی سیریز کا آغاز لارڈز میں شاندار کامیابی سے کیا، جب لندن سے گرین کیپس روانہ ہوئے تو ان کے  قدم زمین پر نہیں پڑرہے تھے، مگر مانچسٹر اور برمنگھم میں امیدوں اور ارادوں پر ایسی اوس پڑی کہ حقیقت میں پاؤں زمین پر ٹکانا مشکل ہوگیا، اب ایک بار پھر ٹیم لندن واپس پہنچ چکی جہاں پر چوتھے اور آخری ٹیسٹ میں اس کا انگلینڈ سے اوول میں  سامنا ہوگا، یہ وہ وینیو ہے جہاں پر اگر 2006 کے فورفیٹ ٹیسٹ کو نکال دیا جائے تو پاکستان 1967 سے نہیں ہارا، یہی بات گرین شرٹس کے حوصلے بڑھانے کا باعث بن رہی ہے۔

سیریز میں یکسر طور پر ناکام رہنے والے محمد حفیظ کو ڈراپ کیے جانے کا امکان ہے،کوچ مکی آرتھر ان کی جگہ افتخار احمد کو کھلانے کا عندیہ دے چکے جو بیٹنگ کے ساتھ اسپن بولنگ بھی کرلیتے ہیں، ان کی موجودگی سے پانچویں بولر کا مسئلہ حل ہوسکتا ہے، اگر انھیں ڈیبیو کا موقع دیا جاتا تو پھر وہ مڈل آرڈر میں بیٹنگ کریں گے جب کہ اوپنر سمیع اسلم کا ساتھ دینے کے لئے اظہر علی کو میدان میں اتارا جائے گا۔

کپتان مصباح الحق  کا کہنا تھا کہ  تیسرے ٹیسٹ میں ہم نے خود اپنی غلطیوں سے انگلش ٹیم کو کم بیک کا موقع دیا، آخری روز لنچ تک میچ ہمارے ہاتھ میں تھا مگر ہم نے اسے گنوادیا، اب ہمارے پاس غلطی کی گنجائش نہیں ہےجب کہ ہم اوول ٹیسٹ جیت کر سیریز برابر کرنے کی پوری کوشش کریں گے۔

ادھر انگلینڈ نے حسب معمول ایک روز پہلے ہی اپنی حتمی الیون کا اعلان کردیا، ایجبسٹن کے فاتح دستے میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی جب کہ دلچسپ بات یہ ہے کہ اوول پر انگلینڈ کا ریکارڈ مایوس کن ہے، 2009 میں یہاں اس نے آسٹریلیا کیخلاف کامیابی کے بعد صرف بھارت پر2011 اور 2014 میں اننگز سے فتح حاصل کی۔

Share.

About Author

Leave A Reply