’’پاکستان کو دہشت گرد قرار دیاجائے‘‘ وائٹ ہاؤس میں بھارت کی پٹیشن خارج

0

اکتوبر 4, 2016
اہم ترین

اپنی رائے دیجئے

images

اسلام آباد ۔ پاکستان بھارت پر ایک بار پھر بازی لے گیا۔ وائٹ ہاؤس نے پاکستان کو دہشت گردی کی سرپرستی کرنے والی ریاست قراردینے کی پٹیشن خارج کردی۔پٹیشن بھارت نواز ارکان کانگریس نے دائر کی تھی جو جعلی دستخط کے باعث خارج کی گئی۔وائٹ ہاؤس نے پاکستان کودہشت گردی کی سرپرستی کرنے والی ریاست قراردینے کی بھارتی پٹیشن خارج کردی اور پٹیشن کو بند کرنے کا اعلان کردیا ہے۔
پاکستان کے خلاف یہ پٹیشن بھارت نواز امریکی کانگریس رکن ٹیڈ پوئے اوردانا روہرابیکر نے جمع کرائی تھی۔وائٹ ہاؤس کا اس سلسلے میں کہنا ہے کہ پاکستان کے خلاف بھارتی پٹیشن ناقابل قبول ہے اور پٹیشن پر کئے گئے دستخط مطلوبہ معیار پر پورا نہیں اترتے۔وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ پٹیشن پر جعلی دستخط کئے گئے جس کی وجہ سے یہ ہٹادی گئی۔واضح رہے کہ پاکستان کی جانب سے بھی وائٹ ہاؤس میں بھارت کو دہشتگردی کی سرپرستی کرنے والا ملک قرار دینے کی پٹیشن دائر کی گئی ہے جس پر بڑی تعداد میں انسانیت کا در رکھنے والے لوگ دستخط کر رہے ہیں۔ پٹیشن کے مطابق بھارت پاکستان میں شدت پسندانہ اور دہشتگردانہ کارروائیوں میں ملوث ہے۔ بھارت خاص طور پر اسلامی جمہوریہ کے خلاف دہشت گردی پھیلانے اور خونی پراکسی جنگوں میں ملوث ہے، خاص طور پر بلوچستان کے صوبے، وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقوں اور کراچی کے میٹروپولیٹن شہر میں بھارت اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے۔پٹیشن میں کہا گیا کہ کل بھوشن یادیو نے اس ضمن میں واضح اقرار کیا ہے اور وہ ایک بڑا ثبوت ہے۔ صرف یہی نہیں، کل بھوشن بھارتی بحریہ کے حاضر سروس کمانڈر ہیں اور انہوں نے یہ بھی اقرار کیا ہے کہ وہ تحریک طالبان پاکستان، القاعدہ اور ISIS کی اعانت سمیت بلوچستان کے مختلف علاقوں میں دہشت گردانہ کارروائیاں کروا رہے ہیں۔ ان تمام شواہد کو مد نظر رکھتے ہوئے بھارت کو ایک دہشت گرد ریاست قرار دیا جائے۔ اس ضمن میں وائٹ ہاؤس کی پٹیشن پر دستخطی مہم جاری ہے اور ذیل میں دیئے گئے لنک پر کلک کرکے پٹیشن پر دستخط کئے جا سکتے ہیں۔:۔
پٹیشن پردستخط کرنے کیلئے یہاں کلک کریں!



2016-10-04

Share.

About Author

Leave A Reply