دھرنے کا مقصد کوئی ذاتی مفاد نہیں بلکہ عوام کو ان کے حقوق دلانا ہیں، مصطفیٰ کمال

0

ہم اپنے جائز مطالبات منوانے کے لئے بھی تشدد کا راستہ اختیار نہیں کریں گے، سربراہ پاک سرزمین پارٹی، فوٹو؛ فائل

کراچی: پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال کا کہنا ہے کہ دھرنے کا مقصد کوئی ذاتی مفاد نہیں بلکہ عوام کو ان کے حقوق دلانا ہیں جب کہ حکومت کی غلط پالیسیوں سے تنگ آکر عوام نے اپنے مسائل کو تقدیر کا فیصلہ سمجھ لیا ہے۔

کراچی پریس کلب کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے پی ایس پی کے سربراہ مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ 10 روز سے احتجاجی دھرنا جاری ہے جس کا مقصد ذاتی مفادات نہیں بلکہ عوام کو ان کے جائز حقوق  دلوانا ہے، ہم حکومت کا خاتمہ یا کوئی عہدہ نہیں چاہتے بلکہ ہمارا مطالبہ عوام کو پانی و بجلی کی بلاتعطل فراہمی، کراچی کو کچرے سے پاک کرنا اورعوامی نمائندوں کو ان کے اختیارات اور وسائل دلانا ہے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: مصطفیٰ کمال کا عوامی حقوق کیلیے تحریک چلانے کا اعلان

پی ایس پی کے سربراہ نے کہا کہ کراچی کے عوام نے مسائل کو اپنی تقدیر کا فیصلہ سمجھ لیا ہے لیکن یہ تقدیر کے فیصلے نہیں حکمرانوں کی غلط پالیسوں کے فیصلے ہیں، ہم نے عوام میں شعور بیدار کرنے کے لئے احتجاجی دھرنا جاری رکھا ہوا ہے اور عملاً 10 راتیں سڑکوں پر گزار کر بتایا کہ ہم عوام کے لئے تکلیفیں اٹھارہے ہیں اور آئندہ بھی اٹھاتے رہیں گے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: انتخابات سے پہلے ایم کیو ایم لندن، پاکستان اورمصطفیٰ کمال ایک ہوجائیں گے

مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس حکومتی نمائندے آئے اور 16 میں سے 8 مطالبات ماننے کی یقین دہانی بھی کرائی لیکن ہم نے واضح کر دیا ہے کہ مانے گئے مطالبات پر عملدرآمدر شروع نہ ہونے تک احتجاج جاری رکھیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کو ایم کیوایم کی عادت پڑی ہوئی ہے اورہمیں بھی ان کی طرح سمجھتی ہے جو حکومتی نمائندوں سے 4 منٹ کے مذاکرات کر کے عوام کو بے وقوف بنا دیتے تھے، اپنے مفادات کی خاطر سمجھوتہ کرلیتے تھے، ہمیں مشورے ملے کہ جب تک تشدد کا عنصر نہیں لائیں گے سندھ حکومت بات نہیں سنے گی لیکن ہم تشدد کا راستہ اختیار کرکے اپنے مطالبات سے عوام کی نظریں ہٹانا نہیں چاہتے۔

Share.

About Author

Leave A Reply