انڈیا کے ساتھ ہمارا مین ایشو کشمیر ہے،نفیس زکریا

0

ترجمان دفترخارجہ نفیس ذکریا نے کہا ہے کہ کشمیر پر پاکستان کا موقف واضح ہے کہ پاکستان ہمیشہ سے کشمیریوں کے ساتھ ہے ۔ انڈیا کے ساتھ ہمارا مین ایشوکشمیر ہے ہماری خارجہ پالیسی ناکام نہیں بلکہ مثبت سمت پر ہے ۔

ایک نجی ٹی وی کے ساتھ انٹرویو میں ترجمان دفتر خاجہ نے کہا کہ اقوام متحدہ میں ہمارا سرفہرست ایجنڈا کشمیر ہی تھا وزیراعظم نے مسئلہ کشمیر اور مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی کو زبردست طریقے سے اجاگر کیا ۔ انہوںنے کہا کہ پاکستان میں دہشت گردی کا ذمہ دار بھارت ہے ۔ افغانستان میں موجود بھارتی قونصل خانے پاکستان میں دہشت گردی کرواتے ہیں ۔ کلبھوشن یادیو کا معاملہ مسلسل اٹھارہے ہیں ۔

ترجمان نے کہا کہ افغانستان میں امن معاہدے کی حمایت کرتے ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ امریکہ کے ساتھ پاکستان کے تعلقات خراب نہیں ۔ انہوںنے کہا کہ پاکستان دہشت گردی کا سب سے بڑا شکار ہے ۔ 70ہزار پاکستانی دہشت گردی کے بھینٹ چڑھ چکے ہیں  ۔ پاکستان ایک ذمہ دار نیو کلیئر پاور ملک ہے تمام ممالک کو ایک ذمہ دار عالمی برادری کے ممبر ہونے کی حیثیت سے رویہ اختیار کرنا چاہیے ۔ ہم دوسروں کے معاملات میں دخل اندازی نہیں کرتے ہیں ۔

پاک بھارت جنگ کے امکان کے بارے میں سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے ۔ ہماری پالیسی ہے کہ ہم اپنے پڑوسی ممالک کے ساتھ امن کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں پاکستان کی عوام اور فورسز اپنے ملک کی سرحدوں اور سالمیت کی حفاظت کرنا بخوبی جانتے ہیں ۔ خدانخواستہ ایسا وقت آیا تو پوری قوم اور فوج شانہ بشانہ ہوگی ۔

ترجمان نے کہا کہ بھارت افغانستان کی سرزمین کو پاکستان کے خلاف استعمال کررہا ہے ۔ ہم نے یہ بات نہ صرف بھارت اور افغانستان بلکہ دنیا کے ان تمام ممالک کو بار بار باور کراچکے ہیں ۔ جن کے افغانستان کے امن کے حوالے سے مفادات ہیں یہی وجہ ہے کہ ہم افغانستان کے ساتھ سرحدی سیکیورٹی کے نظام کو مستحکم کررہے ہیں۔ امریکہ کے وزیر دفاع نے بھی   اپنے بیان میں کہا کہ بھارت افغانستان بیٹھ کر پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کیلئے فنانس استعمال کررہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ طور خم میں گیٹس ہماری اپنی سرزمین پر ہیں جو لگ رہے  ہیں ۔ حفاظتی انتظامات اپنی جگہ پر جاری وساری ہیں ان میں کوئی روک نہیں ۔ افغانستانیوں کے ساتھ بات ہوئی ہے ۔ اس پر ورکنگ گروپ بن چکا ہے ۔ افغانستان میں قیام امن کیلئے کی جانے والی تمام کوششوں کا پاکستان خیر مقدم بھی کرتا ہے اور حمایت بھی کرتا ہے ۔ ہم ایک سہولت کارکا کردار ادا کررہے ہیں کام افغانستان نے کرنا ہے ۔

ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے کہا کہ چین ہمارا بہترین دوست ہے ہماری دوستی کا  قد آسمانوں سے بلند ہے ۔ کشمیریوں کو ہماری اخلاق سیاسی اور سفارتی حمایت جاری ہے اور اس وقت جاری رہے گی جب تک مسئلہ کشمیر کا حل کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق حل نہیں ہوجاتا مسئلہ کشمیر کو عالمی فورموں پر اجاگر کرتے رہیں گے ۔ پارلیمنٹرین کو باہر بھیجنے کی حکومتی سوچ بڑی موثر ہے ۔ یہ لوگ جن ممالک میں جائیں گے وہاں کشمیر پر جاری ظلم وستم کو اجاگر کریں گے ۔

Share.

About Author

Leave A Reply