انجیلو میتھیوز کے جاتے ہی سری لنکن قیادت کا بٹوارہ

0

ٹیسٹ کپتانی کا تاج چندیمل کے سر سج گیا، تھارنگا ون ڈے و ٹی 20 کے ذمے دار مقرر۔ فوٹو فائل

ٹیسٹ کپتانی کا تاج چندیمل کے سر سج گیا، تھارنگا ون ڈے و ٹی 20 کے ذمے دار مقرر
۔ فوٹو فائل

کولمبو: انجیلومیتھیوز کے جاتے ہی سری لنکن قیادت کا بٹوارہ ہوگیا، ٹیسٹ ٹیم کی کپتانی کا تاج دنیش چندیمل کے سر پر سج گیا، اپل تھارنگا ون ڈے اور ٹوئنٹی 20میں ٹیموں کی باگ ڈور سنبھالیں گے، ادھر زمبابوے کے خلاف واحد ٹیسٹ سے آل راؤنڈر دھنن جایا ڈی سلوا کی حیران کن طور پر چھٹی کردی گئی، فاسٹ بولر وشوا فرنانڈو اور دشمانتھا چمیرا کی واپسی ہوئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق زمبابوے کے ہاتھوں ون ڈے سیریز میں شرمناک شکست کے بعد انجیلو میتھیوز نے تینوں فارمیٹس میں قیادت چھوڑ دی تھی جس کے بعد اب سری لنکا نے تینوں فارمیٹس کو دو الگ الگ کپتانوں میں بانٹ دیا ہے۔ ٹیسٹ ٹیم کی قیادت دنیش چندیمل کو سونپی گئی ہے جوکہ میتھیوز کے ڈپٹی کے طور پر ذمہ داری انجام دیتے رہے جبکہ ٹوئنٹی 20 ٹیم کی قیادت بھی کرچکے ہیں اسی طرح ون ڈے اور ٹوئنٹی 20 سائیڈز کی کپتانی اپل تھارنگا کودی گئی ہے جوکہ میتھیوز کے انجری کے روز ایک روزہ ٹیم کی قیادت کرچکے ہیں۔ نئے کپتانوں کے اعلان کے موقع پر میڈیا سے بات چیت میںمیتھیوز نے قیادت کی ذمہ داری سے سبکدوش ہونے کی وجہ ناقص فارم کو قرار دیا ہے، وہ اب اپنے کھیل پر زیادہ توجہ دینا چاہتے ہیں۔

دوسری جانب زمبابوے کے خلاف جمعے سے شیڈول واحد ٹیسٹ کیلیے اسکواڈ کا اعلان بھی کردیا گیا ہے جس میں میتھیوز کی واپسی ہوئی ہے، وہ ہیمسٹرنگ انجری کے سبب بنگلہ دیش سے ہوم ٹیسٹ سیریز نہیں کھیل پائے تھے۔ حیران کن طور پر دھنن جایا ڈی سلوا کو ڈراپ کردیا گیا ہے جبکہ وہ اس وقت نا صرف مکمل فٹ ہیں بلکہ انھوں نے حالیہ کچھ عرصے میں بہتر فارم کا بھی مظاہرہ کیا ہے۔

بیٹسمین کوشل پریرا اور فاسٹ بولر نوان پردیپ کو انجری کے باعث منتخب نہیں کیا گیا، فاسٹ بولرز وشوا فرنانڈواور دشمانتھا چمیرا کی واپسی ہوئی ہے، محدود اوورز کے اوپنر دنوشک گوناتھلاکا کو بھی اپنی بہترین فارم کا صلہ مل گیا ہے۔ منتخب اسکواڈ میں کپتان دنیش چندیمل، اپل تھارنگا، میتھیوز، نروشن ڈیکویلا، ڈیموتھ کرونارتنے، دنوشکا گوناتھلاکا، کوشل مینڈس ، اسیلا گونارتنے، رنگانا ہیراتھ، دلروان پریرا، لکشن سنداکن، وشوا فرنانڈو، دشمونتھا چمیرا، سورنگا لکمل اور لاہیرو کمارا شامل ہیں۔

Share.

About Author

Leave A Reply